پیوٹن کا حسن روحانی کو فون ، شام حملے پر تبادلہ خیال
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
syrian telephone attacked

 روس کے صدر ولادیمیر پیوٹن نے اپنے ایرانی ہم منصب حسن روحانی سے فون پر بات چیت کی، انہوں نے کہا شام پر دوبارہ حملہ تباہی کا باعث بنے گا۔ 

 دوسری جانب فرانس کے صدر ایمانوئل میکرون نے کہا ہے کہ انہوں نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو راضی کر لیا ہے کہ وہ شام سے اپنی فوج کو وطن واپس نہ بلائیں۔ادھر عرب ملکوں کی تنظیم نے شام پر کیمیائی حملے کی مذمت کی ہے، شام میں امریکا، برطانیہ اور فرانس کی جارحیت کے حوالے سے مشوروں اور رابطوں کا سلسلہ جاری ہے۔ روس کے صدر ولادیمیر پیوٹن نے اپنے ایرانی ہم منصب حسن روحانی سے فون پر بات چیت کی، صدر پیوٹن نے کہا شام پر حملہ اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی ہے۔ انہوں نے کہا شام پردوبارہ حملہ تباہی کاباعث بنے گا۔دونوں رہنماؤں نے اتفاق کیا کہ اس حملے سے شام کے سیاسی حل کے لیے کی جانے والی کوششوں کو نقصان پہنچا ہے، ادھر جدید اسلحہ سے لیس روسی بحری جہاز آبنائے باسفورس پہنچنے کی اطلاعات ہیں۔ دوسری جانب فرانس کے صدر میکرون نے کہا ہے کہ انہوں نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو راضی کر لیا ہے کہ وہ شام سے اپنی فوج کو وطن واپس نہ بلائیں اور شام میں طویل مدت کے لیے تعینات کریں۔ایک ٹی وی انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ انہوں نے صدر ٹرمپ کو کہا ہے کہ شام پر حملوں کی تعداد محدود رکھیں، سعودی عرب کے شہر دہران میں عرب لیگ کے رہنماؤں نے کانفرنس کے اختتام پر شام میں مبینہ کیمیائی حملے پر عالمی سطح پر تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔ ایک اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ رکن ممالک اپنے شامی بھائیوں پر استعمال ہونے والے کیمیائی حملے کی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں