الیکشن جیتنے کے بعد پیوٹن نے ایسی بات کہہ دی کہ یورپ سمیت ہر کسی کو حیرت میں ڈال دیا
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
russia president win elections

آج امریکہ دنیا کی واحد سپر پاور ہے لیکن کبھی سوویت روس بھی اس کے مقابلے پر سپر پاور ہوا کرتا تھا، جسے مغرب کی سازشوں اور اندرونی کمزوریوں نے بالآخر کئی ٹکڑوں میں تقسیم کردیا۔

روسی صدر ولادی میر پیوٹن روس کی تباہی پر گاہے بگاہے اظہار خیال کرتے رہتے ہیں لیکن گزشتہ ہفتے ہونے والا جنرل الیکشن جیتنے کے بعد انہوں نے اپنی پارٹی سے خطاب کے دوران ایسی بات کہہ دی کہ ہر کوئی حیرت زدہ رہ گیا۔  روسی صدر الیکشن میں کامیابی کے بعد اپنی پارٹی کے کامیاب ہونے والے رہنماﺅں سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے اس اہم خطاب کے دوران کہا ”سوویت یونین کے انہدام کے بارے میں آپ میرے خیالات سے آگاہ ہیں۔ میرے خیال میں اسے تباہ کرنے کی ضرورت نہ تھی، کیونکہ اصلاحات کر کے اسے بچایا جا سکتا تھا ۔ لیکن میں اس جانب توجہ دلانا چاہتا ہوں کہ اس وقت ہمارے ملک کا کنٹرول کمیونسٹ پارٹی کے پاس تھا، کسی اور کے پاس نہیں۔“ کمیونسٹ پارٹی سوویت روس کے دور میں طاقتور ترین سیاسی پارٹی تھی جبکہ آج کی روسی پارلیمنٹ میں بھی اسے نمائندگی حاصل ہے۔ اس سے پہلے 2005ءمیں جب روسی صدر نے ایک بیان میں سوویت روس کے ایک اقدام کو گزشتہ صدی کی سب سے بڑی جیو پولیٹیکل تباہی قرار دیا تو بھی مغرب میں یہ ہنگامہ برپاہوگیا تھا کہ روسی صدر ایک بار پھر سوویت روس کا دور واپس لانا چاہتے ہیں۔ یوکرین اور ہمسایہ یورپی ممالک کے ساتھ روس کی کشیدگی کو بھی ان کی اسی سوچ کا شاخسانہ قرار دیا، کہ وہ آزاد ہونے والی ریاستوں پر دوبارہ قبضہ کرکے انہیں روس کا حصہ بنانا چاہتے ہیں۔ دوسری جانب روسی صدر متعدد بار واضح کرچکے ہیں کہ سوویت یونین اب ماضی کا قصہ ہوگیا، اور اسے دوبارہ واپس لانے کا خواب نہیں دیکھ رہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں