انسان کا پیدا کردہ اب تک کا سب سے شدید زلزلہ، ماہرین نے تشویشناک انکشاف کردیا
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
reason earthquake world

انسان کا پیدا کردہ اب تک کا سب سے شدید زلزلہ، ماہرین نے تشویشناک انکشاف کردیا

بار بار آنے والے متعدد زلزلوں کو کئی ماہرین قدرتی آفات کی بجائے انسان کی اپنی خطرناک سرگرمیوں کا نتیجہ قرار دے چکے ہیں، اور اب ایک ایسے ہی طاقتور زلزلے کا تعلق ایک نئی ٹیکنالوجی کے استعمال سے ثابت ہو گیا ہے، جبکہ اس زلزلے کو انسان کا اپنا پیدا کردہ طاقتور ترین زلزلہ بھی قرار دیا جا رہا ہے۔ 
نیوز سائٹ ’اے ایچ ٹربیون‘ کے مطابق گزشتہ سال اگست میں کینیڈا کے مغربی صوبے برٹش کولمبیا میں کام کرنے والی کمپنی ’پراگریس انرجی‘ کی ورک سائٹ کے علاقے میں شدید زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے۔ اس زلزلے کے بارے میں کینیڈا کے ادارے نیچرل ریسورسز کینیڈا اور جیو سائنس بی سی کو معلوم ہوا کہ اس کا مرکز کمپنی پراگریس انرجی کی ورک سائٹ سے محض 3کلومیٹر کے فاصلے پر واقع تھا۔ اس معاملے کی تحقیقات کی گئیں اور تین ماہ کی تفتیش کے بعد معلوم ہوا کہ اس زلزلے کی ذمہ دار کمپنی کی فریکنگ کی کوششیں تھیں جن کی وجہ سے زیر زمین توڑ پھوڑ سطح زمین پر زلزلے کا باعث بنی۔

فریکنگ ٹیکنالوجی کو زمین کی تہوں میں انتہائی طاقتور دھماکے کرکے گیس اور تیل کے حصول کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔ حالیہ سالوں میں امریکا میں اس ٹیکنالوجی کو بڑے پیمانے پر استعمال کیا گیا ہے جس کے نتیجے میں امریکا توانائی کی پیداوار میں خود کفیل ہوگیا ہے۔ اس سے پہلے فریکنگ ٹیکنالوجی استعمال کرنے والی کمپنیاں یہ تاثر دیتی رہی ہیں کہ اس کے نتیجے میں انتہائی گہرائی میں معمولی نوعیت کا ارتعاش محسوس ہوتا ہے جو سطح زمین پر انسانوں اور ماحول کے لئے خطرناک نہیں۔ 
دوسری جانب سی بی سی نیوز کا کہنا ہے کہ کینیڈا کے ایک ماہر سائنسدان نے حالیہ زلزلے کی تفصیلات کا جائزہ لینے کے بعد اسے ایک ’قابل ذکر‘ زلزلہ قرار دیا ہے۔ واضح رہے کہ اس سے پہلے اگست 2013ءاور ستمبر 2014ءکے درمیان اسی علاقے میں 1 سے 4.4 شدت کے 230 زلزلے محسوس کئے جاچکے ہیں، لیکن انسان کے اپنے پیدا کردہ 4.6 شدت کے زلزلے کو ایک نیا ورلڈ ریکارڈ قرار دیا جارہا ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں