تعلیم کے لئے برطانیہ جانے کے خواہشمندوں کیلئے انتہائی بری خبر،بڑی پابندی لگ گئی
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
news banned education united kingdom

 برطانیہ میں تعلیم کے دوران کام کرنے یا تعلیم مکمل کرنے کے بعد قیام جاری رکھنا غیر ملکی طلباء کی اولین ترجیح ہوتی ہے لیکن برطانوی سیکرٹری داخلہ کی طرف سے متعارف کروائے جانے والے نئے قوانین نے ان خوابوں کو ناممکن بنادیا ہے۔

سیکرٹری داخلہ تھریسامے کا موقف ہے کہ غیر ملکی طلباء تعلیم کو برطانیہ میں کام کرنے اور قیام کرنے کا بہانہ بنارہے ہیں لہٰذا اب انہیں تعلیم مکمل کرنے کے بعد بہرحال برطانیہ چھوڑنا ہوگا، جبکہ دوران تعلیم کام کرنے پر بھی پابندیاں متعارف کروائی جائیں گی۔ یہ ضوابط یورپی یونین کے علاوہ ممالک سے تعلق رکھنے والے طلباء پر نافذ ہوں گے۔ تھریسامے کا کہنا ہے کہ برطانیہ آنے والے طلباء کی تعداد کی نسبت جانے والوں کی تعداد بہت کم ہے جس کا مطب ہے کہ بہت سے طلباء واپس نہیں جارہے۔

ان کے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ سال نان ای یو ممالک سے 1,21,000 طالب علم برطانیہ آئے جبکہ واپس جانے والوں کی تعداد 51,000 تھی۔ غیر ملکی طلباء کی واپسی یقینی بنانے کیلئے پابندی عائد کی جائے گی کہ وہ تعلیم مکمل کرنے کے بعد ویزا کی درخواست نہ دے سکیں۔ اگرچہ برطانوی وزراء نے نئے ضوابط کی مکمل حمایت کی ہے تاہم برطانوی یونیورسٹیوں کا کہنا ہے کہ اس فیصلے کے منفی نتائج مرتب ہوسکتے ہیں۔ متعدد یونیورسٹیوں کا موقف ہے کہ قابل طلباء کو برطانیہ میں رہنے اور کام کرنے کی اجازت دینا برطانوی معیشت کیلئے ضروری ہے۔

 

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں