سعودی عرب میں یمن سے میزائل حملہ ، اتحادی افواج نے بڑی دھمکی دیدی
messile attack yemen saudi arabia

یمن میں آئینی حکومت کی بحالی کیلئے سرگرم سعودی اتحاد نے اپنے ایک بیان میں انکشاف کیاہے کہ پیر کو بھی یمن سے سعودی عرب میں ایک بیلسٹک میزائل کا حملہ کیاگیا

خوش قسمتی سے یہ میزائل ویران علاقے میں گرا جس کی وجہ سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تاہم عرب اتحاد نے میزائل حملے کو یمنی باغیوں کی جارحیت قرار دیتے ہوئے اس کا سخت جواب دینے کی دھمکی دی جس کی وجہ سے مذاکرات کا مستقبل ایک مرتبہ پھر خطرے میں پڑتادکھائی دیتاہے ۔ العربیہ کے مطابق سعودی عرب کی سرکاری پریس ایجنسی ’واس‘کے حوالے سے بتایاکہ یمن سے میزائل حملے کے بعد سعودی عرب کی مسلح افواج نے فوری طور پر جائے وقوعہ کو اپنے گھیرے میں لے لیا۔ عرب اتحاد کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں یمن سے سعودی عرب میں میزائل حملے کو جارحیت قرار دیتے ہوئے حوثی باغیوں اور منحرف صدر عبداللہ صالح کو اس واقعے کا ذمہ دارقرار دیا۔ یہ میزائل حملہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب اتحادی ممالک عالمی برادری یمن میں قیام امن کے لیے کوشاں ہیںاور کویت کی میزبانی میں مذاکرات کی کوششیں جاری ہیں۔دوسری جانب یمنی حکومت نے باغیوں کی جانب سے سعودی عرب میں میزائل حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت شدت پسند باغیوں کے خلاف زمان ومکان کی قید سے آزاد ہو کر کارروائی کرنے کا حق رکھتی ہے،حکومت کا کہنا ہے کہ باغیوں کی جانب سے جنگ بندی کی بار بار خلاف ورزیوں کی سختی سے روک تھام کی ضرورت ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں