ایمریٹس ائیرلائن نے جہاز میں اب ایک ایسی سیٹ متعارف کروادی کہ مسافروں کا جہاز سے اترنے کا دل ہی نہ کرے گا
emirates airlines seat passenger

دنیا کی بہترین فضائی کمپنی ایمریٹس ائرلائن نے فضائی سفر کی تاریخ میں پہلی بار فرسٹ کلاس مسافروں کے لئے ایک ایسی سہولت متعارف کروادی ہے کہ جسے اب تک صرف سائنس فکشن فلموں میں ہی دیکھا جا سکتا تھا۔

دبئی ائیرشو کے آغاز میں ایمریٹس ائیرلائن نے اس حیران کن سہولت کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ بوئنگ 777 جہازوں پر فرسٹ کلاس کے مسافروں کو 7فٹ x 5 فٹ 8 انچ کے انتہائی آرام دہ اور پر آسائش کیبن دستیاب ہوں گے، جن کی ایک خاص بات ’زیرو گریوٹی‘ سیٹ ہے۔ یہ سیٹ مسافروں کو بے وزنی کی کیفیت کا لطف دینے والی ٹیکنالوجی سے لیس ہو گی، جس کا تجربہ اس سے پہلے صرف خلا میں جانے والے، یا خلائی سفر سے پہلے زمین پر تربیت لینے والے خلانورد ہی کر سکتے تھے۔پرائیویٹ کیبن میں ہر سیٹ کے سامنے ایک کھڑکی ہوگی جبکہ جہاز کے درمیانی حصے میں موجود کیبن کے مسافروں کو ورچوئل ونڈو کی سہولت فراہم کی جائے گی، جس کے ذریعے جہاز کے باہر کا منظر بالکل ایسے ہی نظر آئے گا کہ گویا مسافر حقیقی کھڑکی کے سامنے بیٹھا باہر کا منظر دیکھ رہا ہو۔ یہ منفرد ڈیزائن مرسڈیز بینز ایس کلاس سے لیا گیا ہے۔دی انڈیپینڈنٹ کے مطابق خصوصی پرائیویٹ کیبن میں فراہم کی جانے والی ایک اور منفرد ٹیکنالوجی کے سبب مسافر کو فضائی عملے کو بلانے کیلئے بٹن دبانے کی بھی ضرورت نہیں ہوگی بلکہ وہ ویڈیو لنک کے ذریعے اپنے لئے مشروبات اور کھانا منگواسکیں گے۔ یہ مشروبات اور کھانا ان کے کیبن تک پہنچنے والی ایک سرنگ کے ذریعے خود ہی آئے گا، یعنی فضائی عملے کو کیبن میں بلوانے کی ضرورت نہیں ہو گی۔ آپ ان سہولیات سے مستفید ہونا چاہیں تو اخراجات کچھ زیادہ ہوں گے، یعنی اکانومی کلاس کی نسبت صرف 10 گنا زیادہ۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں