سوچ رہا ہوں کہ عائشہ گلالئی کو فرینڈ ریکوئسٹ بھیج دوں لیکن پھر ۔۔۔
ayesha gila lai comedian america

پاکستان کو اپنا دوسرا گھر قرار دینے والے امریکی کامیڈین جیرمی میک لیلن سوشل میڈیا پر کچھ نہ کچھ چٹکلے چھوڑتے ہی رہتے ہیں لیکن اب کی بار تو انہوں نے عائشہ گلالئی کو ہی نشانے پر رکھ لیا اور ایسی بات کہہ دی کہ سوشل میڈیا پر ہنسی کا طوفان آگیا۔

تفصیلات کے مطابق 31 اکتوبر کومغربی دنیا میں ہالووین کا تہوار منایا جاتا ہے اور اس موقع پر لوگ ڈراﺅنے روپ دھار کر گھروں سے باہر نکلتے ہیں۔ ایک ایسے وقت میں جب مغربی لوگ رنگ برنگے اور ڈراﺅنے روپ دھارنے میں مصروف تھے تو جیرمی نے سوشل میڈیا پر لکھا ’ ہالووین کیلئے میں اپنا گھر سجانا بھول گیا اس لیے سوچ رہا ہوں کہ پڑوسیوں کو ڈرانے کیلئے اپنے پاکستان کا جھنڈا گھر پر لہرا دوں‘۔جیرمی کے پاکستانی جھنڈا لہرانے کے چٹکلے کے بعد عائشہ گلالئی نے انہیں میسج بھیجا اور کہا کہ وہ جیرمی کے حس مزاح کی داد دیتی ہیں لیکن ان کا پاکستانی جھنڈے کے بارے میں کیا گیا ٹویٹ توہین آمیز ہے اس لیے اسے ڈیلیٹ کیا جائے۔عائشہ گلالئی کے میسج کے جواب میں جیرمی نے لکھا کہ انہوں نے اپنے تازہ چٹکلے میں پاکستان کا نہیں بلکہ اپنے پڑوسیوں کا مذاق اڑایا ہے۔عائشہ گلالئی کی جانب سے اس پیغام کو جیرمی نے تفریح کا ذریعہ بنالیا اور اس کا سکرین شارٹ لے کر سوشل میڈیا پر شیئر کردیا۔اس کے بعد جیرمی میک لیلن نے شرمین عبید چنائے کو بھی اشاروں کنایوں میں تنقید کا نشانہ بناڈالا۔ انہوں نے لکھا ’ میں عائشہ گلالئی کو فیس بک پر فرینڈ ریکوئسٹ بھیجنے کے بارے میں سوچ رہا ہوں لیکن میں نے سنا ہے کہ پاکستان میں فرینڈ ریکوئسٹ بھیجنا ہراسگی کے زمرے میں آتا ہے‘۔جیرمی میک لیلن کے جواب پر بھی عائشہ گلالئی کی تسلی نہ ہوئی تو انہوں نے کامیڈین کو دھیمے الفاظ میں سوشل میڈیا پر تنقید کی دھمکی دے دی۔ عائشہ گلالئی نے کہا ’ مجھے آپ کی نیت پر کوئی شبہ نہیں ہے اور میں یہ بھی جانتی ہوں کہ آپ نے نیک نیت کے ساتھ یہ ٹویٹ کیا ہے لیکن ہم پاکستانی لوگ قوم پرستی اور مذہب کے بارے میں بہت جذباتی ہیں، میں اب بھی آپ کو مشورہ دوں گی کہ آپ اپنا ٹویٹ ڈیلیٹ کردیں نہیں تو یہ بیک فائر کرجائے گا‘۔عائشہ گلالئی کے اس میسج کا سکرین شارٹ لے کر جیرمی نے ایک بار پھر سوشل میڈیا پر شیئر کردیاجس کے بعددوبارہ سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا ہوگیا ۔ دونوں پیغامات کے سکرین شارٹس سوشل میڈیا پر شیئر ہونے کے بعد عائشہ گلالئی نے اگلا قدم کیا اٹھایا اس بارے میں راوی خاموش ہے۔امریکی سرزمین پر اترتے ہی انہوں نے پہلی پوسٹ دہشتگردی کے بارے میں کی تھی اور کہا تھا کہ مسلمان ممالک پر دہشتگردی کا الزام لگایا جاتا ہے لیکن یہاں امریکہ میں ہر شخص اپنے ساتھ پستول لے کر گھومتا ہے اور کسی کو پتا نہیں ہے کہ کب آپ کو اندھی گولی کا نشانہ بنادیا جائے گا، لیکن یہ دہشتگردی نہیں ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں