نابینا پن کا کامیاب علاج
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
blindness treatment

نابینا پن کا کامیاب علاج دریافت

برطانیہ کے ماہرین نے پہلی مرتبہ عمررسیدگی سے لاحق ہونے والے لاعلاج نابینا پن کو دور کرنے کے لیے ایک خاص وائڈ اسکرین لینز تیار کیا ہے۔

ونیورسٹی آف مورسیا، اسپین کے پروفیسر پابلو آرٹل اور لندن آنکھوں کے اسپتا ل فارما کے چیف میڈیکل افسر کی مشترکہ کوشش سے تیار کیے گئے اس لینز کو آئی میکس کا نام دیا گیا ہے جو حقیقت میں 2 لینز کا مجموعہ ہے۔ اس لینز کو کورنیا اور آنکھوں کے خمیدہ حصے کے درمیان لگایا جاتا ہے جسے سلکس کہتے ہیں، لینز کے اس مجموعہ کی بدولت آنکھ نہ صرف سیدھ میں ٹھیک طرح سے دیکھتی ہے بلکہ کسی وائڈ اینگل کیمرے کی طرح اطراف کے مناظر کو بھی دیکھا جاسکتا ہے کیونکہ لینز روشنی جمع کرکے پورے میکیولا پرپھیلا  دیتا ہے۔ 50 اور 55 سال سے زائد عمر کے افراد بڑھاپے میں نابینا پن کا شکار ہو جاتے ہیں جسیایج ریلیٹڈ میکیولر ڈی جنریشن کا نام دیا گیا ہے۔ اس کیفیت میں روشنی محسوس کرنے والے سیلز متاثر ہو جاتے ہیں اور رفتہ رفتہ پوری نظر کمزورہوجاتی ہے ۔ ماہرین کے بنائے گئے لینز کے مجموعہوائڈ اسکرین وڑن لینز سے اس مرض پر کافی حد تک قابو پایا جاسکتا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ادویات کے استعمال سے اندھا پن کی رفتار کو کم ضرور کیا جاسکتا ہے لیکن اس کا حتمی علاج موجود نہیں تاہم وائڈ اسکرین لینز بہت حد تک اندھا پن دور کرنے کے لیے موثر ہے اور اطراف سے روشنی جمع کرکے آنکھ کے حصے میکیولہ پر منظر ظاہر کرتا ہے۔ وائڈ اسکرین لینزکو آنکھوں میں لگوانے میں صرف 10 منٹ صرف ہوتے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ موتیے کا آپریشن کروانے والے مریض بھی یہ لینز لگوا سکتے ہیں۔ گزشتہ برس اس لینزکو لگانے کا کامیاب تجربہ 89 سالہ خاتون پر کیا گیا جس کے بعد ان کی ختم ہوتی بصارت بہتر ہوگئی۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں