سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس،ارکان آپس میں الجھ پڑے
sahiwal incedent senate member

سینٹ کی قائمہ برائے داخلہ کے اجلاس میں ارکان آپس میں الجھ پڑے،چیئرمین قائمہ کمیٹی رحمان ملک نے کہا کہ آپس میں نہ لڑیں میں کارروائی معطل کر دو ں گا،ہم آپس میں لڑیں گے تو یہ کیا تاثر لے کر جائیں گے ۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینٹر رحمان ملک کی زیرصدارت قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس ہوا، مقتول ذیشان کی والدہ ،بھائی احتشام ،برادر نسبتی ساجد ،خلیل کے بھائی جلیل اور جمیل بھی کمیٹی روم میں موجودہیں۔مسلم لیگ ن کے سینٹر جاوید عباسی نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ سانحہ ساہیوال میں حکومت ملوث ہے،کیس میں شامل پولیس والے منصف کیسے بن سکتے ہیں؟ان کا کہناتھا کہ پولیس والوں نے خودمارا،جے آئی ٹی بھی پولیس کی ہے،پولیس پرمبنی جے آئی ٹی رپورٹ کونہیں مانیں گے۔صوبائی وزرانے ساہیوال واقعہ پرجھوٹ بولا۔اس پر پی ٹی آئی کے سینٹر ڈاکٹر شہزاد وسیم نے کہا کہ سانحہ میں حکومت ملوث نہیں ،آپ کی خواہشات پر کام نہیں ہو سکتا، وزیراعظم کئی بار کہہ چکے ہیں انصاف ہو گا۔چیئرمین قائمہ کمیٹی رحمان ملک نے کہا کہ آپس میں نہ لڑیں میں کارروائی معطل کر دو ں گا،ہم آپس میں لڑیں گے تو یہ کیا تاثر لے کر جائیں گے۔تحریک انصاف کے سینٹر اعظم سواتی نے کہا کہ جاویدعباسی نے غیرذمہ داری کامظاہرہ کیا،غلطی سی ٹی ڈی کے اہلکاروں نے کی،حکومت اوراداروں پرالزام غلط ہے، یہ انسانی المیہ ہے خاص رخ نہ دیا جائے ،وزیراعظم نے کہا ہے جیسے چاہیں تحقیقات کر لیں ۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں