وکلاء کے قتل میں ملوث ایس ایچ او ڈسکہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے
remand sho daska lawyer murder

عدالت نے وکلاء کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم ایس ایچ او شہزاد اکرم کو 12 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کی تحویل میں دے دیا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق ایس ایچ او ڈسکہ شہزاد اکرم کو سخت سیکیورٹی میں انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نمبر ایک کے جج چوہدری امتیاز احمد کے روبرو پیش کیا۔ پولیس کی جانب سے ملزم کے 15 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی تاہم عدالت نے ڈسکہ واقعہ کے مرکزی ملزم شہزاد اکرم کا 12 روزہ جسمانی ریمانڈ دیتے ہوئے اسے پولیس کی تحویل میں دے دیا ہے۔ عدالت نے پولیس کو حکم دیا ہے کہ ملزم کو 8 جون کو دوبارہ پیش کیا جائے اور تحقیقات کے حوالے سے آگاہ کیا جائے۔ واضح رہے کہ 2 روز قبل ایس ایچ او ڈسکہ شہزاد اکرم نے ساتھی اہلکاروں کے ساتھ مل کر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 2 وکیل جاں بحق اور 2 افراد زخمی ہو گئے تھے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں