نقیب اللہ محسود قتل از خود نوٹس کیس کی سماعت میں وقفہ ، راﺅ انوار نے بہت بڑا موقع ضائع کردیا : چیف جسٹس
rao anwar naqibullah mehsud supreme court

نقیب اللہ محسود قتل از خود نوٹس کیس کی سماعت میں راﺅ انوار کے پیش نہ ہونے پر کچھ دیر کیلئے وقفہ کردیا گیا ہے۔

چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں کہا ہے کہ راﺅ انوار نے بہت بڑا موقع ضائع کردیا ہے۔نقیب اللہ محسود قتل از خود نوٹس کیس کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا 2 رکنی بینچ کر رہا ہے۔ آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ عدالت کے روبرو پیش ہوئے جبکہ سابق ایس ایس پی ملیر راﺅ انوار حفاظتی ضمانت ملنے کے باوجود عدالت نہیں آئے۔ راﺅ انوار کے پیش نہ ہونے پر چیف جسٹس نے آئی جی سندھ سے استفسار کیا کہ آئی جی صاحب آپ نے راﺅ انوار کی گرفتاری کیلئے کیا کیا؟، پولیس کی ذمہ داری ہے کہ راﺅ انوار کو گرفتار کرے تمام ایجنسیوں کو بھی پولیس کی مدد کا کہا تھا۔ چیف جسٹس نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ ہم نے راﺅ انوار کو پیش ہونے کی مہلت دی تھی میرے خیال میں انہوں نے بہت بڑا موقع ضائع کردیا ہے ، تھوڑی دیر انتظار کرلیتے ہیں۔واضح رہے کہ راﺅ انوار نے گزشتہ سماعت پر سپریم کورٹ کو خط لکھا تھا جس میں نقیب اللہ قتل کیس کی تحقیقات کیلئے آزاد جے آئی ٹی کی تشکیل کا مطالبہ کیا تھا ۔ چیف جسٹس نے راﺅ انوار کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے اور خط کی تصدیق کا حکم دیا تھا اور کہا تھا کہ راﺅ انوار کے ذاتی حیثیت میں پیش ہونے پر ہی جے آئی ٹی تشکیل دی جائے گی تاہم سابق ایس ایس پی ملیر عدالت پیش نہیں ہوئے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں