وزیراعظم کا لندن جانے کا معاملہ طبی معائنہ نہیں پاناما لیکس ہے، طاہرالقادری
panama leaks tahir ul qadri prime minister

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نواز شریف کے لندن جانے کا معاملہ طبی معائنے کا نہیں بلکہ پاناما لیکس کا ہے اور اب وہ معائنہ نہیں پورا علاج کرائیں گے۔

کینیڈا کے شہر ٹورنٹو سے ویڈیو پریس کانفرنس کرتے ہوئے ڈاکٹر طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ پاناما لیکس ملکی تاریخ کا سب سے بڑا اسکینڈل ہے جب کہ مختلف ممالک کے وزرائے اعظم بغیر کسی کمیشن کے مستعفی ہوئے ہیں لیکن وزیراعظم نواز شریف الزامات کا جواب دینے کے بجائے لندن چلے گئے اور وہ وہاں بیکٹیریا صاف کرنے گئے ہیں جن کی واپسی پر جتنے کمیشن بنالیں لیکن کوئی بیماری نہیں ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاناما لیکس کا سوئس اکاؤنٹس میں پڑے 200 ارب ڈالر سے گہرا تعلق ہے، وزیراعظم لندن سے پاناما لیکس پر سوالات کا دستایزی ثبوت لائیں گے لیکن سب کو معلوم ہے کہ جائز کاروبار کرنے والوں کو آف شو کمپنی بنانے کی ضرورت نہیں ہوتی اور چور ڈکیت لوگ ہی آف شور کمپنی بناتے ہیں۔

ڈاکٹر طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ لندن میں ون ہائیڈ پارک کی لیز حسن نواز کے نام سے کی گئی ہے جس کی ادائیگی 21 مارچ کو کی گئی، اگلے چند دنوں میں وزارا کو نئے دلائل اورنئے اعداد و شمار مل جائیں گے جس پر حکمراں جماعت بات کرے گی، پاکستان میں آئین اور قانون کب طاقتور ہوگا، ایف آئی اے اور نیب سیاست سے پاک ہوتے تو حکمراں برطرف ہوچکے ہوتے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں