وزیر اعظم کی ایسی حرکت جس نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا،الیکشن کمیشن بھی خاموش نہ رہا
new pandora boxes election commission prime minister

وفاقی اور صوبائی نگراں حکومت کے قلمدان سنبھالنے والی شخصیات نے تاحال الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت اپنے اثاثوں کی تفصیلات الیکشن کمیشن آف پاکستان میں جمع نہیں کروائیں۔

واضح رہے کہ الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت نگراں وزیراعظم، وزیراعلیٰ اور ان کی کابینہ کے ارکان عہدہ سنبھالنے کے بعد 3 روز کے اندر اپنے اثاثوں کی مکمل تفصیلات جمع کرانے کے پابند ہیں۔میڈیا رپورٹ کے مطابق ای سی پی کے حکام نے بتایا کہ نگراں حکومت میں شامل ہونے والے تمام ارکان اپنی اہلیہ اور بچوں کے اثاثوں سے متعلق بھی آگاہ کریں گے۔نگراں وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک نے یکم جون کو وزارت عظمیٰ کا قلمدان سنبھالا اور انہیں 4 جون تک اپنے، اپنی اہلیہ اور بچوں کے اثاثوں سے متعلق ساری معلومات ای سی پی میں جمع کرانی تھی تاہم مذکورہ تاریخ گزر جانےکے ایک ہفتے بعد بھی الیکشن ایکٹ کی پاسداری نہیں کی گئی۔ای سی پی حکام کا کہنا تھا کہ ان کی کابینہ کے 6 لوگوں نے اپنے اثاثوں کی تفصیلات پیش کر دی ہیں۔ادھرعوامی نیشنل پارٹی نے خیبرپختونخوا سے قومی اسمبلی کے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کردیا۔اے این پی کے سربراہ اسفند یار ولی قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 24 چار سدہ 2 سے الیکشن لڑیں گے ٗ پارٹی کے سینئر رہنما غلام احمد بلور کو این اے 31 پشاور 5 سے ٹکٹ دیا گیا ہے۔ سابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا امیر حیدر خان ہوتی کو این اے 21 مردان ٹو سے ٹکٹ دیا گیا ہے اور ہری پور کی نشست این اے 14 سے ارم فاطمہ اے این پی کی امیدوار ہوں گی۔ قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 6 لوئر دیر ون سے زاہد خان الیکشن لڑیں گے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں