نعیم الحق نے دانیال عزیز کو تھپڑ مارا تو عمران خان نے انہیں کیا کہا؟ ایسا انکشاف کہ ہر پاکستانی کے واقعی ہوش اڑ جائیں گے
naeem ul haq slap imran khan

 پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے ترجمان نعیم الحق نے کہا ہے کہ پارٹی چیئرمین عمران خان نے دانیال عزیز کو تھپڑ مارنے کے عمل کی تعریف کی اور کہا کہ آپ نے بہت اچھا کیا ہے جبکہ پی ٹی آئی کے چاہنے والوں نے بھی اس اقدام کو سراہا ہے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ فیس بک پر لائیو ویڈیو میں ایک صارف نے ان سے سوال کیا کہ آپ نے دانیال عزیز کو تھپڑ کیوں مارا جس پر انہوں نے جواب دیا ”وہ ایک وفاقی وزیر ہے جو عمران خان اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی قیادت کو کئی سال سے گالیاں نکال رہا تھا اور بہت جھوٹ بولتا ہے۔آج بھی اس نے قومی اسمبلی میں کھڑے ہو عمران خان کو چور کہا حالانکہ عمران خان خود اسمبلی میں موجود تھے۔ میں نے اسے ردعمل میں تھپڑ مارا اور مجھے اس پر کوئی پشیمانی نہیں ہے مگر ٹیلی ویژن کی ایک ذمہ داری ہوتی ہے کہ ایسے لوگوں کو ساتھ نہ بٹھائے یا انہیں موقع نہ دیا جائے جو ہمیشہ غلط زبان استعمال کرتے ہوں، میں کبھی غلط زبان استعمال نہیں کرتا بلکہ مسلم لیگ (ن) کے اکثر اراکین میری بہت عزت کرتے ہیں۔اس شخص نے جب عمران خان کی ذات پر حملے کئے، کرتا رہا، جھوٹ بولتا رہا اور جب اس نے مجھے چور کہا تو وہ ایک قدرتی عمل تھا جو میں نے اسے تھپڑ مارا۔ عمران خان نے اس کی تعریف کی کہ آپ نے بہت اچھا کیا کیونکہ یہ بہت عرصے سے زہر گھول رہا تھا جبکہ تحریک انصاف کو چاہنے والوں نے بھی میرے اس اقدام کو سراہا ہے۔بہت سے لوگوں نے اس کی مخالفت بھی کی ہے مگر میں سمجھتا ہوں کہ جب لوگ گالیاں دیتے ہیں اور برا بھلا کہتے ہیں تو اس وقت میڈیا والے کچھ نہیں کہتے لیکن جب ایک ہاتھ پڑ گیا جو صحیح پڑا تو پھر میڈیا والے پریشان ہو جاتے ہیں تو اس میں مقابلہ کرنا بھی ضروری ہوتا ہے کہ گالی دینا زیادہ بہتر ہے یا تھپڑ مارنا زیادہ بہتر ہے۔میری کوئی اہمیت نہیں ہے میں پارٹی کا ایک ورکر ہوں لیکن عمران خان ہمارے اگلے وزیراعظم ہیں جو اکیس بائیس سال ے محنت کر رہے ہیں۔ وہ گزشتہ 40 سال سے قومی ہیروں ہیں اور ان کی ایک عزت ہے، ان کیخلاف اس قسم کے لوگ جب ایسی باتیں کرتے ہیں تو وہ ہمارے لئے ناقابل قبول ہیں۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں