سانحہ 12 مئی کیس؛ میئر کراچی وسیم اختر کے خلاف مقدمات کا چالان منظور
may 12 tragedy case tragedy waseem akhtar mqm

سانحہ 12 مئی کے کیس سے متعلق پولیس نے اپنے چالان میں دعویٰ کیا ہےکہ میئر کراچی وسیم اختر نے سانحہ میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا ہے جب کہ ان کے خلاف چالان منظور کرکے کیس اے ٹی سی کو بھجوادیا گیا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق رہنما ایم کیو ایم پاکستان اور مئیر کراچی وسیم اختر سمیت دیگر ملزمان کے خلاف قتل، اقدام قتل سمیت 4 مزید مقدمات کا چالان منظور کرلیا گیا ہے جب کہ تمام کیسز کو سماعت کے لیے انسداد دہشت گردی کی عدالت میں منتقل کردیا گیا ہے۔

عدالت میں پیش کیے گئے پولیس چالان کے مطابق مئیرکراچی وسیم اختر نے سانحہ 12 مئی میں ملوث ہونے کا اعتراف کرلیا ہے اور انہی کی نشاندہی پر ملزم اسلم کالا کو گرفتار کیا گیا ہے۔ چالان کے متن میں کہا گیا ہے کہ مقدمے میں وسیم اختر اور 2 ارکان اسمبلی کامران فاروقی اور محمد عدنان سمیت 49 ملزمان نامزد ہیں جن میں سے کچھ مقدمات میں کامران فاروقی اورمحمد عدنان سمیت 49 ملزمان تاحال  گرفتارنہیں ہوسکے جب کہ وسیم اختر،اسلم کالا سمیت 20 ملزمان گرفتار ہیں، ملزمان پرتھانہ ائیرپورٹ کی حدود میں ہنگامہ آرائی ، فائرنگ ، جلاؤ گھیراؤ اور توڑ پھوڑ کے الزامات ہیں۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں