فیصلے کی کوئی فکر نہیں جو بھی آیا قبول کروں گا، ایک بھی کاغذ جعلی ہوا تو خود نکل جاؤں گا،عمران
elections nawaz sharif imran khan

پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ شاہد خاقان مفلوج وزیراعظم، ملک میں جمہوریت غیر فعال ہے۔

فیصلے کی کوئی فکر نہیں جو بھی آیا قبول کروں گا۔ ایک بھی کاغذ جعلی ہوا تو خود نکل جاؤں گا۔ (ن) لیگ میں باغی گروپ بن چکا ارکان رابطے میں ہیں۔ مریم نواز کا میڈیا سیل فوج پر حملے کر رہا ہے۔مجرم کو پارٹی صدر بنانے کی کہیں مثال نہیں ملتی۔ اداروں کا ن لیگ اور پیپلز پارٹی کے ساتھ رویہ برابر نہ ہونے کا پیپلز پارٹی کا شکوہ درست ہے۔ پاکستان تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان نے کہا کہ پانامہ کیس سے فارغ ہونے کے بعد ہم نے عوام میں جانے کا فیصلہ کیا ہوا تھا اور مجھے لگتا ہے حکومت کا آخری سال چل رہا ہے اور اپنی مدت پوری کرتی نظر نہیں آ رہی۔مسلم لیگ (ن) نواز شریف کی خاندانی پارٹی ہے اس کے لئے نواز شریف اپنے خاندان کو بچانے کے لئے پارٹی کا استعمال کر رہا ہے۔ آئین کے مطابق تو الیکشن اگست میں ہونے ہیں مگر ملک میں حکومت نام کی کوئی چیز نظر نہیں آ رہی ملک معاشی بحران کا شکار ہے۔ وزیر خزانہ لندن میں پہنچ گئے اور بہت خوف ناک تصویر سامنے آئی ہے جس سے لگتا ہے وہ جلد پاکستان آنے والے نہیں ہیں۔میرے خیال میں ن لیگ والے ان سے غلط کام نہیں کروا سکے۔ فوج نے ان کے حق میں کام نہیں کیا۔ اس لئے فوج پر حملے کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جیسے جلسے ہم کرتے ہیں کوئی اور کرکے دکھا دے۔ آصف علی زرداری اوربلاول بھٹو سرکاری مشنری کا استعمال کر کے جلسے کرتے ہیں۔ ملک میں جمہوریت ادارے طاقت ور ہوں گے تو تیسری قوت کے داخلے کی گنجائش نہیں ہو گی۔ آرمی چیف نے ملک کی معیشت پر بات کی تو کیا گناہ کیا ہے۔ ملکی معیشت کی بہت فکر ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں