سپریم کورٹ نے لاہور ہائیکورٹ کافیصلہ معطل کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کا ضابطہ اخلاق بحال کر دیا
election commission high court supreme court

سپریم کورٹ نے لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے ضمنی انتخابات کیلئے الیکشن کمیشن کا ضابطہ اخلاق بحال کر دیاہے جس کے بعد ضمنی انتخابات میں وفاقی و صوبائی وزراءانتخابی حلقوں میں نہیں جا سکیں گے ۔
 

تفصیلات کے مطابق جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے الیکشن کمیشن کی جانب سے ضابطہ اخلاق کی بحالی کے لئے دائر درخواست کی سماعت کی،درخواست گزار نے اپنے دلائل میں کہا کہ ضمنی انتخاب کے دوران وزیروں کی دوڑیں لگ جاتی ہیں اور اربوں روپے کے ترقیاتی ترقیاتی پیکیج سے انتخابی نتائج متاثر ہوتے ہیں، جسے روکنے کے لئے الیکشن کمیشن نے آرٹیکل18کی روشنی میں ضابطہ اخلاق تیار کیا۔سپریم کورٹ نے لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے درخواست کی سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کر دی۔واضح رہے کہ الیکشن کمیشن کا ضابطہ اخلاق بحال ہونے سے وفاقی اور صوبائی وزیر انتخابی حلقوں میں نہیں جا سکیں گے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں