بنی گالہ جائیداد کیس میں کپتان برُی طرح پھنس گئے نیا سکینڈل سامنے آگیا
bani gala supreme court imran khan

 بنی گالہ جائیداد سے متعلق سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی عمران خان کی اپنی دستاویز میں تصادات سامنے آ گئے۔ الیکشن کمیشن میں جمع کرائے گئے گوشواروں میں 300 کنال اراضی کو عمران خان نے تحفہ قرار دیا ہے جبکہ سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے بیان حلفی میں جائیداد کپتان نے خود خریدی۔

کیا سچ ہے اور کیا جھوٹ؟ اس سوال کا فیصلہ تو عدالت کرے گی لیکن بات نکلی ہے تو اب دور تلک جائے گی۔ عمران خان کے دوست راشد علی خان کے بینک اکاؤنٹس کے ریکارڈ میں تضاد کا انکشاف ہوا ہے۔ راشد علی خان نے عدالت میں 2 الگ الگ بینک لیٹرز جمع کرائے۔ پہلے لیٹر میں جمائما کی 10 بینک ٹرانزیکشنز، دوسرے میں 5 ٹرانزیکشنز ظاہر کی گئیں۔ادھر عمران خان کے دوست راشد خان نے بھی اپنے بیان حلفی میں کہا ہے کہ جائیداد عمران خان نے خریدی، عمران خان پاکستان میں جمائما کو سیٹل کرنے کیلئے زمین لینا چاہتے تھے۔ بیان حلفی کے مطابق، لندن فلیٹ کی فروخت میں تاخیر کے باعث عمران نے رقم جمائما سے ادھار لی اور لندن فلیٹ فروخت ہونے پر عمران خان نے جمائما کو رقم واپس کر دی۔بیان حلفی میں کہا گیا ہے کہ طلاق کے بعد جمائما نے عمران کی دی گئی جائیداد رکھنے سے انکار کر دیا۔ دوسری طرف، بنی گالہ اراضی کی خریداری کیلئے جمائما کا لندن سے رقم بھجوانے کا معاملہ بھی سامنے آیا ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں