سپریم کورٹ نے ایان علی کو بڑی خوشخبری سنا دی
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
ayyan ali model supreme court

ایان علی کے وارنٹ معطل ، چودھری نثار لڑکی کے پیچھے پڑے ہوئے ہیں‘ وکیل

سپریم کورٹ نے کسٹم انسپکٹر اعجاز قتل کیس میں ماڈل ایان علی کے وارنٹ گرفتاری معطل کر دیئے ہیں جبکہ ای سی ایل کے معاملے پر سندھ ہائیکورٹ نے ماڈل کی فوری سماعت کی درخواست منظور کر لی۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کسٹم انسپکٹر اعجاز قتل کیس میں ماڈؒل ایان علی کے وارنٹ گرفتاری معطل کر دیئے ہیں ، جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔ماڈل کی جانب سے وارنٹ گرفتاری کو آج سپریم کورٹ میں چیلنج کیا گیا تھا ، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ ماڈل کو مقدمہ کی پیروی سے روکا جا رہا ہے ، کسٹم انسپکٹر اعجاز کے قتل کے موقع پر ماڈل ایان علی جیل میں تھی۔وکیل کا کہنا تھا کہ کسٹم انسپکٹر اعجاز قتل میں ایان علی براہ راست نامزد نہیں ، انہیں انتقامی کارروائی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔دریں اثنا سندھ ہائی کورٹ نے ای سی ایل میں ڈالنے کے متعلق ماڈل ایان علی کی فوری سماعت کی درخواست منظور کرلی ، اٹارنی جنرل نے سندھ ہائی کورٹ میں جواب جمع کرا دیا۔پنجاب حکومت کی جانب سے لاہور ہائی کورٹ میں ایان علی کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا معاملہ زیر سماعت ہے ، ایڈووکیٹ قادر خان نے کہا کہ ہم نے تمام تر معاملات دیکھ لیے، ایان علی کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے کہیں بھی احکامات نہیں ، عدالت نے معاملے پر سماعت 5 اگست تک ملتوی کر دی ،پانچ اگست کو دونوں فریقین دلائل دیں گے۔ایان علی کے وکیل قادر مندوخیل نے ہائیکورٹ پیشی کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ چودھری نثارعلی ایک لڑکی کے پیچھے پڑے ہوئے ہیں اور عدالتی حکم کی انحرافی کی جا رہی ہے۔انھوں نے کہاکہ ہم نے عدالت سے درخواست کی ہے کہ ایان علی کو ناظر مقرر کر کے بیرون ملک روانہ کیا جائے ، قتل کے مقدمے میں ای سی ایل میں نام شامل نہیں کیا جا سکتا۔جس مقدمے میں ایان علی کا نام شامل کیا گیا ہے ، اسے ٹانگ میں گولی لگی تھی ، وہ بعد میں فوت ہوا ، یہ توہین عدالت ہے ، عدالت نے قرار دیا تھا کہ ہائیکورٹ کو بتائے بغیر نام ای سی ایل میں شامل نہیں کیا جا سکتا۔انھوں نے بتایا کہ عدالت نے فوری سماعت کی درخواست منظور کرتے ہوئے دوبارہ سماعت 5 تایخ کو مقرر کر دی ہے ۔ عدالت میں اٹارنی جنرل کی جانب سے جواب جمع کرایا گیا ، جواب میں ایان علی کا ایف آئی آر میں کوئی نام نہیں ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں