رانا ثنا اللہ اورانوشہ رحمان کو برطرف کیا جائے،20مذہبی جماعتوں کا مطالبہ
anusha rehman khan demand rana sanaullah

ملک کی 20 دینی جماعتوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ختم نبوت کے عظیم کاز کے دو عظیم مجرم اور منکرین ختم نبوت فتنہ قادیانیت کی حمایت کرنے پر رانا ثناء اللہ اور انوشہ رحمان کو فی الفور ان کے عہدوں سے برطرف کیا جائے ورنہ احتجاج کا سلسلہ لاہور سے نکل کر پنجاب اور پورے ملک میں پھیل جائیگا

ختم نبوتؐ حلف حزف کرنے میں ن لیگ کی اور بھی اعلیٰ شخصیات ملوث تھیں جنہیں منظر عام پر نہیں لایا جارہا جس سے شکوک و شبہات میں مزید اضافہ ہورہا ہے،قوم کو بتایا جائے کہ ختم نبوتؐ حلف حزف کرنے کا مسودہ غیر ملکی سفارتخانوں اوراین جی اوز کو کس نے پہنچایا، مذہبی جماعتیں آئندہ الیکشن میں قادیانیوں کے یاروں کو ووٹ نہ دینے کی شرعی مہم چلائینگے اور اس سلسلے میں چاروں مکاتب فکر کے علماءِ کرام فتوے بھی جاری کرینگے۔ان خیالات کا اظہارکل مسالک ’’ورلڈ پاسبان ختم نبوت‘‘ کے سربراہ علامہ محمد ممتاز اعوان جے یو آئی کے مولاناحسین احمدجے یو پی کے مفتی عاشق حسین رضوی تحریک ختم نبوت کے مولانا پیر سلمان منیرجمعیت اہلحدیث کے مولانا عبد اللہ روپڑی جمعیت اہلسنت کےسربراہ مولانا محمد حنیف حقانی تحریک ملت جعفریہ کے علامہ وقار حیدر نقوی جماعت اسلامی کے علامہ شعیب الرحمن تحریک تحفظ حرمین شریفین کے ناظم اعلیٰ میاں محمد طاہر سنی علماء فورم کے علامہ اصغر چشتی جمعیت مشائخ پاکستان کے پیر اختر رسول انٹر نیشنل ختم نبوت موومنٹ کے مولانا شبیر احمد عثمانی مجلس احرار اسلام کے مولانا محمد یوسف احرارجے یو آئی (س)کے مولاناعبد الرؤف فاروقی تحریک حرمت رسولؐ کے علی عمران شاہین مصطفائی جسٹس موومنٹ کے میاں محمداشرف عاصمی ایڈووکیٹ جمعیت علماءِ اہلسنت کے سربراہ حافظ حسین احمد اعوان اتحاد علماء کونسل کے مولانا محمد اسلم ندیم انجمن غلامان مصطفےٰ کے پیر شان علی قادری اور تحریک اتحاد بین المسلمین کے امیر مولانا محمد زبیر ورک نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں کیا۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں