ٹریفک سگنل کی روشنیاں سرخ، زرد اور سبز کیوں ہیں؟
traffic signals color reason light

ان کو ایسے ہی نہیں چن لیا گیا

اگر آپ گاڑی یا موٹرسائیکل چلاتے ہیں تو جانتے ہوں گے کہ سگنل پر سرخ روشنی پر رک جانا ہے جبکہ سبز پر چلانا ہے، آسان ہے ناں؟ مگر کیا وجہ ہے کہ ٹریفک سگنل کے لیے ان رنگوں کا انتخاب کیا گیا جو ہم روز دیکھتے ہیں اور دیکھنے میں اتنے بھلے بھی نہیں لگتے۔ مگر کیا آپ کو معلوم ہے کہ ٹریفک سگنلز کی یہ روشنیاں گاڑیاں سڑک پر آنے سے قبل ہی سامنے آچکی تھیں اور ٹرینوں کے لیے انہیں استعمال کیا جاتا تھا۔ لیکن ٹرینوں کے لیے سرخ روشنی رکنے کا اشارہ کرتی تھی تو سفید چلنے کا، جبکہ سبز کا مطلب احتیاط ہوتا تھا۔ مگر یہ سفید روشنی ٹرین ڈرائیورز کے لیے مسئلے کا باعث بن گئی بلکہ ایک دفعہ تو ایک ڈرائیور نے روشن ستارے کو سگنل کی روشنی سمجھ کر ٹرین چلا دی۔ اس طرح کے واقعات کے بعد سفید کی جگہ سبز کو دی گئی اور سبز کی جگہ زرد رنگ کو منتخب کیا گیا۔ جہاں تک رنگوں کے چناﺅ کی بات ہے تو سرخ رنگوں کو اکثر ثقافتوں میں خطرے کی علامت سمجھا جاتا ہے، اور یہ سوچ گاڑیوں کو تیار کرنے سے پہلے کی ہے۔ اس کو منتخب کرنے کی وجہ یہ بھی ہے کہ اس کی ویو لینتھ سب سے لمبی ہوتی ہے اور اسے دیگر رنگوں کے مقابلے میں زیادہ دور سے بھی دیکھا جاسکتا ہے۔ جہاں تک زرد رنگ کی بات ہے تو اس کی ویو لینتھ سرخ کے مقابلے کچھ کم ہوتی ہے مگر سبز جتنی کم نہیں ہوتی اور اسی لیے اسے ڈرائیورز کو احتیاط برتنے کا اشارہ دینے کے لیے استعمال کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں