”پیٹ درد کا 2 مرتبہ جنسی زیادتی کے ذریعے انوکھا علاج“
stomach pain sex abuse through unique treatment

پیٹ میں درد ایک عام سی بیماری ہے جو معمول سے ہٹ کر کھانے کی وجہ سے بھی ہوجاتی ہے لیکن بھارت میں ایک گرو(پنڈت) نے پیٹ درد کا علاج کرنے کی بہانے خاتون کو دو مرتبہ بدفعلی کا نشانہ بنا ڈالا اور ساتھ ہی کسی کو بتانے کی صورت میں خاندان کے مارے جانے کی دھمکی بھی دے ڈالی ۔
این ڈی ٹی وی کے مطابق معدے میں دردسے نجات دلانے کے بہانے بدفعلی کا نشانہ بنانے والے پنڈت کومتھورا کی عدالت نے 25سال قید کی سزاسنادی ، بدفعلی کا یہ واقعہ ورنداوان کے علاق ے میں موجود آشرم میں اس وقت پیش آیا تھاجب خاتون نے بابا دوارکاداس تک گزشتہ سال جولائی میں مسلسل پیٹ درد کی شکایت پر رسائی حاصل کی تھی ، خاتون اپنے شوہر اور چارسالہ بچی کے ہمراہ بابا جی کے آشرم پر آئی تھی اور ہدایت کی تھی کہ وہ دوسرے فلور پر موجود کمرے میں ٹھہرے ، رات 10بجے بری بلاﺅں سے چھٹک ارا ہوگا۔ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کونسل پراوین کمارسنگھ نے بتایاکہ باباجی نے خاتون کے شوہر کو ہدایت کی کہ جب وہ بری بلاﺅں سے چھٹکارے کی کوشش کریں گے تواسی وقت وہ چراغ لیے سیڑھیوں کے نیچے کھڑا رہے ، خاتون کی مزاحمت کے باوجود بابا جی نے اسے بدفعلی کا نشانہ بناڈالا اور کہاکہ بری بلاﺅں سے چھٹکارے کے لیے کی جانیوالی کوشش کا حصہ ہے ، جب خاتون کا شوہر سوگیاتودوسری مرتبہ پھر اسے بدفعلی کا نشانہ بنایاگیالیکن وہاں سے نکلنے کے فوری بعد خاتون نے ساری صورتحال سے اپنے خاوند کو آگاہ کردیا۔اس مقدمے کی سماعت کرنیوالے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ جج نے بابا جی کو25ہزار روپے جرمانہ بھی کیا اور اگر یہ جرمانے کی رقم ادانہ کی گئی تو ملزم کو مزید 27ماہ جیل میں گزارنا پڑیں گے ۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں