ہم اپنے آپ کو گدگدی کیوں نہیں کرپاتے؟سائنس نے جواب دےدیا
self determination reason tickle

اپنے آپ کو گدگدی کرنے کی کوشش کی جائے تو کبھی نہیں ہوتی اور ایساکیوں نہیں ہوتا؟سائنسدانوں نے اس کا جواب ڈھونڈ لیا ہے اور ان کا کہنا ہے کہ دماغ ہمارے جسم میں گدگدی والی جگہ کے بارے میں سگنل بھیجتا ہے جس سے ہمیں گدگدی کا احساس ہوتا ہے۔

یونیورسٹی کالج آف لندن کی تحقیق کار سارہ جیان کا کہنا ہے کہ ہمارے پچھلے دماغ جسے سیری بلم کہا جاتا ہے کہ ہمارے جسم کے اوپر ہونے والے مختلف حسات کو محسوس کرکے بقیہ دماغ کو اس کے بارے میں بتاتا ہے۔ تحقیق میں چھ لوگوں پرتجربات کئے اور جب ان کے ہاتھ پر گدگدی کی گئی تو اس دوران ان کے دماغ کو ایک مشین کے ساتھ سکین کیا گیا،اس تجربے کو دوبارہ دہرایا گیا۔پہلی بار سیری بلم نے دماغ کو خبردار نہ کیا جس کی وجہ سے انہیں گدگدی ہوئی یعنی کہ ہمارا دماغ دھوکہ کھا گیا لیکن دوسری بار جب گدگدی کی گئی تو تب انہیں گدگدی نہ ہوئی یعنی اس دوران ہمارا دماغ خبردار ہوچکا تھا۔ماہرین کا کہنا ہے کہ جب ہم اپنے آپ کو گدگدی کرتے ہیں تو ہمارا دماغ یہ جانتا ہے کہ یہ عمل ہوگا لہذا وہ پہلے ہی سے خبردار ہو جاتا ہے اور گدگدی محسوس نہیں ہوتی لیکن اگر کوئی اور کرے تو اس وقت تک دماغ کو یہ علم نہیں ہو پاتا اور ہمیں گدگدی ہوتی ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں