اس آدمی کی ناک 44سال سے بند تھی ،بالآخراندر سے کیا نکلا؟جان کر آپ کی حیرت کی انتہا نہ رہے گی
nose treatment man british interesting

برطانوی شخص سٹیو ایسٹن کی عمر 51 سال ہے اور وہ تقریباً گزشتہ 44سال سے ناک کی بندش کی تکلیف کا شکار رہے ہیں۔ انہوں نے اس بیماری کا علاج کروانے کی کوشش بارہا کی لیکن اس سے نجات نہ ملی مگر ایک دن اچانک انہیں چھینکوں کا دورہ پڑا اور ایک زور کی چھینک کے ساتھ ان کی ناک سے پلاسٹک کا ایک ٹکڑا اڑتا ہوا نکل کر باہر آن گرا۔
 سٹیو یہ منظر دیکھ کر حیران اور خوفزدہ ہوگئے لیکن یہ دیکھ کر ان کی خوشی کی انتہا نہ رہی کہ ان کی ناک کی بندش کا مسئلہ حل ہوگیا۔ انہوں نے 44 سال بعد پہلی دفعہ اپنی ناک کو کھلا ہوا اور سانس کو آسانی سے چلتا ہوا محسوس کیا۔ سٹیو اس حیرت انگیز واقعے کی تفصیل بتانے اپنی 77 سالہ والدہ پیٹ کے پاس پہنچے تو ایک اور حیران کن بات ان کئی منتظر تھی۔ معمر خاتون نے سٹیو کو بتایا کہ جب وہ سات سال کا تھا تو ایک کھلونا پستول کے ساتھ کھیلتے ہوئے اس نے اس کی لمبوتری پلاسٹک کی گولی کے سرے پر لگا پلاسٹک کا چپکنے والا ٹکڑا نگل لیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ وہ سٹیو کو ڈاکٹر کے پاس لے کر گئے لیکن اس ٹکڑے کا کوئی سراغ نہ ملا۔
اس دن کے بعد وہ اکثر بخار اور ناک کی بندش کے مسائل سے دوچار رہا لیکن کبھی اس مسئلے کی وجہ معلوم نہ ہوسکی۔ سٹیو نے جب اپنے ڈاکٹر کو یہ واقع سنایا تو ڈاکٹر نے بتایا کہ پلاسٹک کا ٹکڑا تقریباً 4دہائیوں سے اس کی ناک میں ہی پھنسا ہوا تھا۔ ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ سٹیو کی والدہ کو غلط فہمی ہوئی کہ ان کے ننھے بیٹھے نے پلاسٹک کا ٹکڑا نگل لیا تھا جبکہ حقیقت میں یہ اس کی ناک میں چلا گیا تھا۔ سٹیو کا کہنا ہے کہ ان کی ناک سے برآمد ہونے والا پلاسٹک کا ٹکڑا جزوی طور پر گلا ہوا تھا۔ ڈاکٹر نے ان کے تفصیلی معائنے کے بعد بتایا کہ خوش قسمتی سے اس ٹکڑے کی وجہ سے ان کے جسم کو دیگر کوئی نقصان نہیں پہنچا۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں