بچوں کی صلاحیتیں بڑھانے میں مددگار 10 سرگرمیاں
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
game activities children

بچوں کے نئے ہنر سیکھنے کے لیے گیمز سے زیادہ بہتر کوئی طریقہ نہیں۔ درحقیقت اگر آپ اپنے بچوں کے لیے درست گیمز کا انتخاب کریں تو آپ کا بچہ کافی ہنر سیکھ سکتا ہے جس میں جسمانی، جذباتی اور ذہنی ہنر شامل ہیں۔

آپ کو کرنا صرف یہ ہے کہ ان گیمز میں اپنے بچوں کے ساتھ حصہ لیں اور ان کے تخیل کو ابھاریں۔ مندرجہ ذیل پیش کی گئیں 10 سرگرمیوں میں سے انتخاب کریں:آپ کو کرنا صرف یہ ہے کہ پلاسٹک کی کچھ خالی بوتلیں لیں اور ان میں مختلف اشیاء جیسے کہ خشک چاول، دانے، ریت یا کنکر بھر دیں۔ پھر ان کا ڈھکن اچھی طرح ٹیپ سے بند کردیں تاکہ بچے اسے کھول نہ سکیں۔ اب اپنے بچوں سے کہیں کہ وہ اسے ہلائیں اور ساتھ ساتھ آپ کچھ گنگنا سکتے ہیں اور ان بوتلوں سے دھنیں ترتیب دے سکتے ہیں۔ آپ کے بچے یہ جان کر بہت حیران ہوں گے کہ کس طرح مختلف چیزیں مختلف آوازیں پیدا کرتی ہیں۔چھو کر محسوس کرنے کی کئی کتابیں مارکیٹ میں دستیاب ہیں جن سے بچوں کو کسی چیز کی ساخت محسوس کرنے میں مدد ملتی ہے۔ آپ ان کتابوں میں دیے گئے الفاظ بھی ساتھ ساتھ پڑھ سکتے ہیں تاکہ آپ کا بچہ صرف محسوس نہ کرے بلکہ ان کے نام بھی سیکھے۔اس سرگرمی میں آپ اپنے بچوں کو کئی موٹر اسکلز (جسمانی حرکات) وغیرہ آوازوں کی مدد سے سکھا سکتے ہیں۔ تالیاں بجائیں، چٹکیاں بجائیں، اپنے پیر زمین پر بجائیں اور بچوں سے کہیں کہ وہ آپ کی پیروی کریں۔اس سے بچہ نہ صرف خوش ہوتا ہے بلکہ ان کی جسمانی حرکات بھی بہتر ہوتی ہیں۔ ان کی انگلیوں کی گرفت مضبوط ہوتی ہے۔ اپنے بچوں کو ایک کے اوپر ایک سجانے والی چوڑیاں (اسٹیکنگ رنگز) دیں اور ان سے کہیں کہ وہ ایک ایک کرکے انہیں ہٹائیں اور پھر واپس رکھیں۔ ہر چوڑی کا رنگ باآواز بلند پکارنے سے وہ رنگوں کے نام بھی سیکھ پائیں گے۔بچوں کو جسمانی اعضاء یا ایسی ہی دیگر چیزوں کے بارے میں سکھانا زیادہ مشکل یا پریشان کن کام نہیں ہونا چاہیے۔ 'سائمن کہتا ہے' گیم کے ذریعے آپ بچوں کو اپنے جسمانی اعضاء کے بارے میں سکھاتے ہیں جیسے کہ 'سائمن کہتا ہے، اپنی انگلیاں ہلائیں'، یا پھر، 'سائمن کہتا ہے، اپنے پیروں کو ہاتھ لگائیں'۔ اس طرح کے کچھ مزاحیہ جملے مثلاً 'مینڈک کی طرح چھلانگ لگائیں' وغیرہ ایک طویل عرصے تک کھیل میں ان کی دلچسپی برقرار رکھنے میں مددگار ثابت ہو سکتے ہیں۔کچھ چیزیں اکھٹی کریں اور اپنے بچوں سے کہیں کہ وہ انہیں آپ کے اور ان کے بیچ میں بانٹ لیں۔ اگلی دفعہ آپ دیکھیں گے کہ وہ چیزیں اپنے دوستوں کے ساتھ بانٹیں گے اور آپ کو فخر ہوگا۔اپنے گھر میں رکاوٹیں بنائیں اور بچوں سے کہیں کہ وہ چیزوں کے اوپر، نیچے اور آس پاس سے ہوتے ہوئے انہیں پار کریں۔ اس سے انہیں جسمانی اعضاء کے درمیان ربط اور اپنا توازن برقرار رکھنے میں مدد ملے گی۔بچوں کی عمر کے مطابق کچھ پزل حاصل کریں اور دیکھیں کہ ان کی ذہنی صلاحیتیں کس طرح فوراً پروان چڑھتی ہیں۔ بچوں میں نہ صرف مسائل کے حل کی صلاحیت بہتر ہوں گی بلکہ ان میں صبر بھی پیدا ہوگا۔ آپ کی تعریف ان کے اعتماد میں بھی اضافہ کرے گی۔اپنے بچے کے سامنے ایک جیسی نظر آنے والی چیزیں سجائیں اور ان سے کہیں کہ ان میں جو سب سے الگ ہے، اسے ایک طرف رکھ دیں۔ بلاکس، کارڈز اور مختلف چیزیں اس گیم کو مزید لطف انگیز بنائیں گی۔ایسا گیم کھیلیں جس میں مختلف سرگرمیاں ہوں مثلاً ناچنا، کودنا یا تصویریں بنانا اور جیسے ہی آپ کہیں 'ریڈ لائٹ' تو بچے وہ کام کرنا بند کردیں۔ اس سے بچوں کو خود پر کنٹرول سیکھنے میں مدد ملے گی اور بے صبر ہوئے بغیر آپ کی ہدایات ماننے کی عادت پیدا ہوگی۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں