خواتین کو پیٹھ پیچھے دوسری خواتین کی برائیاں کرنے کا بہت زیادہ شوق کیوں ہوتا ہے؟ بالآخر سائنسدانوں نے معمہ حل کردیا
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
back biting female reason male

کہا تو جاتا ہے کہ خواتین کو غیبت کی بہت عادت ہوتی ہے لیکن فی الحقیقت کچھ مرد بھی اس گناہ بے لذت کے مرتکب ہوتے ہیں۔

یہ مردوخواتین ایسا کیوں کرتے ہیں؟ اب کینیڈا کے سائنسدانوں نے اس سوال کا حیران کن جواب دے دیا ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے تحقیقاتی سروے کے نتائج میں بتایا ہے کہ ”خواتین غیبت اور لگائی بجھائی اس لیے کرتی ہیں کیونکہ وہ سمجھتی ہیں کہ اس طرح وہ دوسری عورتوں کی برائی کر کے اس مرد کا دل جیت سکتی ہیں جس سے وہ محبت کرتی ہیں۔اس طریقے سے وہ اپنے تئیں اس مرد اوراردگرد موجود دیگر خوبصورت خواتین کے متعلق معلومات اکٹھی کرنے کی کوشش کرتی ہیں۔ خواتین زیادہ تر دوسری خواتین کی شکل و صورت کے متعلق غیبت کرتی ہیں جبکہ مرد دوسرے مردوں کی ترقی اور کامیابی کے متعلق غیبت کرتے ہیں۔“ اس تحقیقاتی سروے میں یونیورسٹی آف اوٹاوا کے سائنسدانوں نے 17سے 30سال عمر کے290طلباءو طالبات سے کچھ سوالات پوچھے اور نتائج مرتب کیے جن میں معلوم ہوا کہ ”جو مردوخواتین اپنی ہی جنس کے دیگر افراد کے ساتھ مسابقتی رویہ رکھتے ہیں ان میں غیبت کرنے کی عادت زیادہ ہوتی ہے اور وہ غیبت کے بعد خود کو بہت پرسکون محسوس کرتے ہیں۔خواتین مردوں سے زیادہ غیبت کرتی ہیں اور اس سے لطف اندوز بھی زیادہ ہوتی ہیں۔وہ زیادہ تر دوسری خواتین کی شکل و صورت اور لباس کو ہدف بناتی ہیں۔خواتین غیبت کو بہت بڑی سماجی قدر خیال کرتی ہیں اور سمجھتی ہیں کہ اس طریقے سے انہیں اپنی ’رقیب‘ کے متعلق بہت معلومات حاصل ہوتی ہیں جس سے انہیں اپنے محبوب کے ساتھ تعلق مضبوط بنانے اور اس کا دل جیتنے میں مدد ملتی ہے۔“ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہم ایڈم ڈیوس کا کہنا تھا کہ ”ہماری تحقیق میں یہ معلوم ہوا ہے کہ خواتین محض اس لیے غیبت نہیں کرتیں کہ ان کی جنس میں کوئی ایسی چیز ہے جو انہیں اس کام پر مجبور کرتی ہے۔ وہ دراصل اپنے لیے بہتر شریک حیات کی تلاش کے لیے غیبت کرتی ہیں اور ان خواتین کو نشانہ بناتی ہیں جنہیں وہ اس مقصد میں اپنی سب سے بڑی مخالف سمجھتی ہیں۔“ سائنسدانوں کی ایک الگ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ جب خواتین غیبت کرتی ہیں تو ان کے دماغ میں آکسی ٹوسن (انسان کو فرحت و شادمانی بخشنے والا ہارمون)پیدا ہوتا ہے جس سے وہ بہت راحت محسوس کرتی ہیں اور جو دو خواتین آپس میں غیبت کررہی ہوتی ہیں وہ اسی راحت کے باعث خود کو ایک دوسرے کے بہت قریب سمجھنے لگتی ہیں۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں