ایڈز کے علاج میں اہم پیشرفت
  • 0
  • 1

http://tuition.com.pk
treatment aids

ایڈز کے علاج میں اہم پیشرفت

سائنسدانوں نے ایڈز کو قابو کرنے میں دو اہم پیش رفت سامنے آنے کا دعویٰ کیا ہے جس میں ایڈز کے جسم میں چھپے رہنے کی وجہ اور اس کے ذمہ دار سینکڑوں جین دریافت کیے گئے ہیں۔ شکاگو کے نارتھ ویسٹرن فائنبرگ سکول آف میڈیسن کے ماہرین کے مطابق یہ بات معلوم ہوچلی ہے کہ ایڈز بدن میں کس طرح سفرکرتا ہے اور کیسے چھپ کررہتا ہے یہاں تک کہ وہ اگر خون میں بھی نہ آئے تب بھی اسے شناخت کرنا ممکن ہوگا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اس سے معلوم ہوسکتا ہے کہ وائرس کم کرنے والی دوائیں روکنے کے بعد ایڈز بدن میں کیسے پوشیدہ رہتا ہے اور کس طرح واپس پلٹتا ہے اور اس سے بہتر دوا بنانے میں مدد مل سکتی ہے۔ ڈیلاس کی یوٹی سائوتھ ویسٹرن میڈیکل سینٹر کے ماہر ڈاکٹر نے بتایا کہ ایچ آئی وی وائرس ایک پروٹین ٹیٹ بناتا ہے جو 400 جین پر حملہ کرکے ان کو تبدیل کرتا ہے تاکہ ایڈز بدن میں مزید پھیل سکے جب کہ اس کے علاوہ ایچ آئی وی وائرس صحت مند خلیات کو تباہ کرتا رہتا ہے اور بیماریوں سے لڑنے والے امنیاتی خلیات کو بھی نقصان پہنچاتا ہے۔ ماہرین نے ایڈز کے طریقہ واردات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا ہے کہ ایچ آئی وی وائرس 400 کے قریب جین پر اثرانداز ہوتا ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں