کینسر کی مریضہ خاتون جسے ڈاکٹروں نے 22سال پہلے 2ماہ میں موت کی خبرسنادی،اس خطرناک بیماری سے کیسے بچ نکلی؟بالآخر راز سے پردہ اٹھ گیا
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
patient treatment cancer

کینسر کی مریضہ خاتون جسے ڈاکٹروں نے 22سال پہلے 2ماہ میں موت کی خبرسنادی،اس خطرناک بیماری سے کیسے بچ نکلی؟بالآخر راز سے پردہ اٹھ گیا

خواتین میں چھاتی کا کینسر انتہائی خطرناک مرض سمجھا جاتا ہے اور اس میں مبتلا خواتین کے لئے زندگی ایک موت کاپیغام بن کرہ جاتی ہے لیکن برطانوی خاتون جین پلانٹ ایک ایسی خوش نصیب خاتون ہے جسے 22سال قبل ڈاکٹروں نے بتا دیا تھا کہ وہ زیادہ سے زیادہ2ماہ کی مہمان ہے لیکن پھر اس پرقدرت کو رحم آگیا اور وہ آج تک زندہ ہے۔ امپیریل کالج لندن میں جیو کیمسٹری کی 65سالہ پروفیسر جین پلانٹ اور اس کے شوہر پیٹرسیمپسن کے تین بچے اور چھ پوتے پوتیاں ہیں۔جین کا کہنا ہے کہ وہ محض 42سال کی تھی جب اسے اپنے جسم میں کینسر کا علم ہوا اوراس نے علاج کے ذریعے 5سال تک اپنے آپ کو ٹھیک رکھا۔لیکن یہ1993ء کی بات ہے جب ڈاکٹروں نے اسے بتایا کہ اس کی چھاتی کا کینسر اس حد تک پھیل چکا ہے کہ اب وہ زیادہ سے زیادہ دو ماہ کی مہمان ہے۔اس کی بیماری کے اور یقینی موت کے بارے میں سن کر اس کاچھ سال کا بچہ بھی رونے لگااور گھر میں سب اداس ہوگئے۔جین کا کہنا ہے کہ اس نے اوراس کے شوہر نے دنیا کے نقشے پر دیکھا کہ چین میں ایک لاکھ میں سے صرف ایک خاتون کو یہ مرض لاحق ہے جبکہ برطانیہ میں یہ شرح ایک لاکھ میں دس کی ہے۔مزید پڑھنے کے بعد جین کو یہ علم ہوا کہ کھانے کی عادات کی وجہ سے بھی اس مرض سے بچا جا سکتا ہے اور اگر اپنے کھانوں میں جانوروں کی پروٹین(گوشت)،ڈیری مصنوعات سے اجتناب کیا جائے ارو پھلوں،سبزیوں،خشک میوہ جات اور دالوں کا استعمال کیا جائے تو کافی افاقہ ہوگا۔جین نے اپنے کھانے پینے کے معمولات میں تبدیلی کردی اور اس کے کینسرکی گلٹیاں ختم ہوگئیں۔جب ڈاکٹروں نے اسے بتایا کہ یہ کیموتھراپی کی وجہ سے ہے تو وہ اداس ہوگئی لیکن پھر بھی ہمت نہ ہاری اور اپنے کھانے پینے میں احتیاط کرتی رہی اور پھر کرشمہ ہوگیا اور وہ آج تک زندہ ہے۔جین کا کہنا ہے کہ جیسے جیسے اس کی عمر بڑھ رہی ہے اسے یہ اطمینان ہوتا ہے کہ وہ اب بھی زندہ ہے۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں