سُرخ لونگ کے زبردست فوائد
  • 0
  • 0

http://tuition.com.pk
clove benefits

سرخ لونگ زمانہ قدیم سے بہت سی بیماریوں کا علاج سمجھی جاتی ہے۔ حال ہی میں ڈنمارک کی آرتھس یونی ورسٹی نے اس پر تازہ تحقیق کی اور اس کے طبّی فوائد پر روشنی ڈالی ہے۔

سُرخ لونگ خشک جڑی بوٹی کے طور پر استعمال کی جا سکتی ہے اور اس کی چائے بھی بنائی جا سکتی ہے۔ اس میں مندمل کرنے کی طاقت پائی جاتی ہے، جبکہ ٹنکچر اور کیپسول کی شکل میں بھی دستیاب ہے۔ سرخ لونگ کو اپنی غذا میں شامل کرنے کی بہت ہی معقول وجوہ ہیں۔

٭ ہڈیوں کی صحت کیلئے مفید

سرخ لونگ میں کیلشئم اور دوسری معدنیات (منرلز) پائی جاتی ہیں۔ ان کے علاوہ اس میں دوسرے صحت بخش اجزا بھی ہوتے ہیں، لہٰذا اگر آپ اپنی ہڈیاں مضبوط رکھنا چاہتے ہوں تو لونگ کھائیں۔ تازہ تحقیق کے مطابق لونگ سے ہڈیوں کا بھُر بھُر اپن (اوسٹیو پوروسز) ختم ہو جاتا ہے اور جوڑوں کی بیماریاں بھی دور ہوجاتی ہیں۔

٭ ہارمونز کی سطح میں توازن

تحقیق سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ سرخ لونگ کھانے سے ایّام کا نظام بہتر ہو جاتا ہے، کیوں کہ اس میں آئسوفلیوونس  (ISOFLAVONES) اجزا ہوتے ہیں جن سے آپ کا مزاج بھی خوش گوار رہتا ہے۔ اس سے چھاتی اور غدّئہ قدامیہ (پروسٹیٹ گلینڈ) کے سرطان کا خدشہ بھی نہیں رہتا۔

٭ دل کو صحت مند رکھتی ہے

سرخ لونگ میں فلیوونائڈز (FLAVONOIDS) بھی ہوتے ہیں، جن سے بلڈ پریشر اور کولیسٹرول کی سطح کم رہتی ہے۔ چناں چہ جن مریضوں میں دل کی کم زوری کی خاندانی بیماری پائی جاتی ہے یا جنھیں عارضہ قلب کی شکایت رہتی ہے، معالج انھیں مشورہ دیتے ہیں کہ وہ ہفتے میں تین دن لونگ کھائیں۔ اسے کھانے سے دل کے دورے اور فالج کے خدشات کم ہوجاتے ہیں۔ اس کے علاوہ اس میں ایک ایسا خاص جُزو بھی پایا جاتا ہے، جس سے دل کے عضلات قوی ہوجاتے ہیں اور شریانوں میں تھکّے نہیں پڑتے۔ اس طرح دل کی بیماریوں قریب نہیں آتیں ۔

٭ جِلد کی شگفتگی کیلئے

لونگ میں ایسے اجزا بھی ہوتے ہیں، جو عمر رسیدگی کو روکتے ہیں۔ یہ جِلد میں لچک بھی پیدا کرتی ہے، لہٰذا جھرّیاں پڑنے کے خدشات نہیں رہتے۔ جِلد کیلئے بنائی جانے والی وہ کریمیں جن میں لونگ کا عرق شامل ہوتا ہے، خراب بافتوں (ٹشوز) کو صحت مند رکھتی ہیں اور جِلد کو دھوپ کے مضراثرات سے بچاتی ہیں۔ اس کے علاوہ ایگزیما، چہرے پر پڑنے والے چکتّوں (RASHES) اور جِلد کی دوسری خرابیوں کو بھی ختم کرتی ہیں۔

٭ قوتِ مدافعت میں اضافہ

سرخ لونگ میں حیاتین ج (وٹامن سی) ہوتی ہے، جو قدرتی طور پر قوت مدافعت کو بڑھاتی ہے۔ اس کے علاوہ اس سے موسمی بخار اور جراثیمی تعدیے (انفیکشنز) بھی ختم ہوجاتے ہیں۔

تازہ ترین

اپنا تبصرہ چھوڑیں